10

بدعنوانی پر ڈی سی قمبر شہدادکوٹ کو سات سال کی سزا

ایک احتساب عدالت (اے سی) ، سکھر نے ہفتہ کے روز میونسپل کارپوریشن سکھر بدعنوانی کیس میں اپنا محفوظ فیصلہ سنانے کا اعلان کیا

تفصیلات کے مطابق عدالت نے اس کیس میں 11 شریک ملزمان سمیت ڈپٹی کمشنر قمبر شہدادکوٹ جاوید احمد جاگیرنی کو سات سال قید کی سزا سنائی۔

فیصلے کے اعلان کے بعد ڈی سی قمبر شہدادکوٹ اور دیگر ملزمان کو تحویل میں لے لیا گیا۔ قومی احتساب بیورو (نیب) سکھر نے میونسپل کارپوریشن لاڑکانہ ، ڈپٹی کمشنر قمبر شہدادکوٹ ، جاوید جیگیرانی ، اور دیگر افسران سمیت 7 افسران کے خلاف 64.77 ملین روپے کے بدعنوانی کا ریفرنس دائر کیا تھا۔

نیب نے میونسپل کارپوریشن ، لاڑکانہ کے ذریعہ 2012 سے 2014 تک ترقیاتی کاموں کے دوران بدعنوانی کی تحقیقات کی تھیں۔

عبدالقادر شیخ نامی ایک ملزم ، جو ٹھیکیدار تھا ، اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا جبکہ تین دیگر ملزمان نے نیب سے درخواست کا سودا کیا۔



.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں